Latest News

برکینا فاسو میں بڑا دہشت گردانہ حملہ، 35 لوگوں کی موت، 80 دہشت گرد ڈھیر

برکینا فاسو میں بڑا دہشت گردانہ حملہ، 35 لوگوں کی موت، 80 دہشت گرد ڈھیر

اوگاڈوگو: مغربی افریقی ملک برکینا فاسو کے صوبے صوم میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں کم از کم 35 افراد کی موت ہوگئی جس میں زیادہ ترخواتین شامل ہیں۔ صدر روچ مارک نے ایک بیان جاری کرکے یہ اطلاع دی۔
صدر نے کہا،اس جارحانہ حملے میں کم از کم 35شہریوں کی موت ہوگئی جس میں زیادہ تر خواتین شامل ہیں۔ میں متاثرہ کنبوں کے تئیں اپنی تعزیت کا اظہار کرتاہوں۔ اس حملے کے جواب میں فوج نے ایک مہم چلا کر 80 دہشت گردوں کو مارگرایا اور ان کے اہم آلات اور گاڑیاں ضبط کرلیں۔
فوج کی جانب سے جاری ایک پریس ریلیز کے مطابق اس حملے میں فوج کے چار جوانوں کی موت ہوگئی۔ اس کے علاوہ تقریباً 20 سلامتی افسر زخمی ہوگئے۔ اس حملے کے پیش نظر صدر روچ مارک نے ملک میں اگلے 48 گھنٹوں کیلئے قومی سوگ کا اعلان کیا ہے۔
صدر نے ٹویٹ کیا،اربندا میں منگل کو ہوئے دہشت گردا نہ حملے کے متاثرہ کنبوں اور فوجیوں کی یاد میں میں نے 25دسمبر، بدھ کی نیم شب سے ملک میں اگلے 48گھنٹوں کے لئے قومی سوگ کا اعلان کیا ہے۔  واضح رہے کہ برکینا فاسو2016 سے القاعدہ اور دولت اسلامیہ جیسی دہشت گرد تنظیموں سے منسلک اسلامی گروپوں کی سرگرمیوں کا سامنا کر رہا ہے۔
قابل غور ہے کہ سال 2015 سے برکینا فاسو میں ہونے والے دہشت گردانہ حملوں میں 700 سے زائد افراد کی موت ہو چکی ہے جس میں 200 فوجی بھی شامل ہیں. اس کے علاوہ ہزاروں لوگو ں کو اپنا گھر بار چھوڑ کر محفوظ مقامات پر پناہ لینی پڑی ہے۔
 



Comments


Scroll to Top